وزیر اعظم شہباز اور آصف زرداری نے فوج پر الزامات لگانے پر عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنایا

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری، پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور وزیر اعظم شہباز شریف۔  - اے ایف پی/فائلز
پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری، پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور وزیر اعظم شہباز شریف۔ – اے ایف پی/فائلز
  • وزیراعظم کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کے سربراہ کو بغیر ثبوت افسران کو بدنام کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔
  • زرداری کہتے ہیں کہ پی ٹی آئی سربراہ نے اداروں کو بدنام کرنے کی تمام حدیں پار کر دیں۔
  • وزیراعلیٰ نقوی کا کہنا ہے کہ عبوری حکومت کسی کو اداروں کی تذلیل کی اجازت نہیں دے گی۔

اسلام آباد/لاہور: وزیر اعظم شہباز شریف، پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور پنجاب کے نگراں وزیر اعلیٰ محسن نقوی نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے فوج پر سنگین الزامات کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

پی ٹی آئی کے سربراہ پر تنقید پی ایم انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کا معمولی سیاسی فائدے کی خاطر پاک فوج اور ایک خفیہ ایجنسی کو بدنام کرنے اور دھمکیاں دینے کا عمل انتہائی قابل مذمت ہے۔

“جنرل فیصل نصیر اور ہماری انٹیلی جنس ایجنسی کے افسران کے خلاف بغیر کسی ثبوت کے الزامات لگانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی اور اسے برداشت نہیں کیا جائے گا۔”

دوسری جانب سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ پی ٹی آئی سربراہ نے اداروں کو بدنام کرنے کی تمام حدیں پار کر دی ہیں، جسے مزید برداشت نہیں کیا جائے گا۔

آصف زرداری نے پی ٹی آئی سربراہ کا نام لیے بغیر ایک بیان میں کہا کہ اداروں کو بدنام کرنے کی کوشش نے اس شخص کا اصل چہرہ بے نقاب کر دیا ہے اور اب بہت ہو گیا، غیر ملکی ایجنٹ کی تقریر سننے کے بعد کوئی محب وطن اس کے پیچھے چلنے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔

آصف زرداری نے کہا کہ پاک فوج کے بہادر اور نامور افسران پر الزامات اس ادارے پر حملہ ہے جس کے ساتھ پورا پاکستان کھڑا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک شخص جھوٹ اور فریب سے اپنے معصوم کارکنوں کو بے وقوف بنا رہا ہے، میں اس شخص کا زوال دیکھ رہا ہوں۔ سابق صدر نے کہا کہ یہ وہ ملک ہے جہاں ہم سب کو دفن ہونا ہے، ہم ایک شخص کو اپنی اقدار اور ملک سے کھیلنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

زرداری نے کہا کہ ایک شخص ہمارے آباؤ اجداد، ہمارے بچوں اور ہمارے ملک کو تباہ کرنے پر تلا ہوا ہے جس کی ہم اجازت نہیں دیں گے۔

دریں اثناء پنجاب کے نگران وزیراعلیٰ نے زور دے کر کہا کہ عبوری حکومت کسی کو صوبے میں اداروں اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کی تذلیل یا دھمکی دینے کی اجازت نہیں دے گی۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے ٹویٹر پر کہا: “ہم کسی کو پنجاب میں اپنے اداروں اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کی تذلیل یا دھمکی دینے کی اجازت نہیں دیں گے۔ ذمہ دار پاکستانی شہریوں کی حیثیت سے یہ ہماری اولین ذمہ داری ہے کہ ہم ان عناصر کی مذمت کریں جو دراصل پاکستان کے دشمنوں کو فائدہ پہنچا رہے ہیں۔

وزیراعلیٰ نقوی نے یقین دلایا کہ صوبائی حکومت قانون پر عملدرآمد کرے گی اور مجرموں کا احتساب کیا جائے گا۔

Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں