فخر زمان نے پاکستان ٹیم کا بڑا مسئلہ حل ہونے کی نوید سنا دی ہے۔

نیوزی لینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز کا میلہ فخر زمان نے کہا اور 363 رن بنا کر مین آف دی سیر کے ساتھ ہی انہوں نے قومی ٹیم کے بڑے مسئلے کی نوید بھی سنا دی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق نیوزی لینڈ کے خلاف پانچون ڈے میچوں پر مشتمل میلہ فخر زمان نے لیا اور 363 رنز کر مین آف دی قرار قرار۔

بہترین کھلاڑی کا اعزاز حاصل کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فخر زمان نے کہا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کو مڈل کا مسئلہ درپیش تھا وہ ابھی تک حل نہیں ہوا۔

فخر نے یہ بھی کہا کہ وہ اپنی کارکردگی سے مطمئن ہیں اور کراچی زمانہ میں غلطیاں ان کی شکل میں انہیں جلد بہتر کرنے کی کوشش کریں۔

پاکستانی کھلاڑی نے نیوزی لینڈ کے خلاف میں لگاتار دو سنچریاں اور ان بہترین اسکور 180 رنز ناٹ آؤٹ پانچ اننگز میں ایک بار ناٹ آؤٹ کرتے ہوئے انہوں نے 90.75 کی اوسط سے 363 رنز بنائے۔

کپتان بابر اعظم کے آخری اور کھلاڑی سنچری ون ڈے میچ میں صرف ایک رن بناکر میدان بدر نے مجموعی طور پر 276 رنز بنائے جس میں ایک سنچری اور دو نصف سنچری شامل ہیں۔ ان کی بہترین کاوش 107 رنز رہی۔

امام الحق کو تین میچوں میں موقع ملا جس میں انہوں نے دو نصف سنچریوں کی مدد سے 174 رنز جوڑے۔ محمد رضوان نے میچوں میں 161 میں جب آغا سلمان نے چار میچوں میں 153 رنز اسکور کیے۔

بولنگ میں پاکستانی فاسٹ بولر حارث رؤف سب سے آگے چل رہے ہیں نیوزی لینڈ کی 9 وکٹیں اُڑیں، شاہین آفریدی نے 8 شکار کیے۔ محمد وسیم اور اسامہ میر نے 6، 6 پلیئرز کو فیلڈ بدر کیا، نسیم شاہ اور ایڈم ملن نے 5.5 وکٹیں اُڑائیں، شیلے نے 4 جبکہ شاداب خان نے 3 وکٹیں حاصل کیں۔

تبصرے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں