ایپل نے ویژن پرو اے آر ہیڈسیٹ کے ساتھ میٹا کا مقابلہ کیا۔

ایپل نے حال ہی میں کیلیفورنیا میں ایک تقریب میں ایک بڑا اعلان کیا ہے، جس میں Vision Pro کے نام سے ایک نئی پروڈکٹ متعارف کرائی گئی ہے، جو کہ ایک ورچوئل رئیلٹی (VR) ہیڈ سیٹ ہے۔

یہ ہیڈسیٹ وی آر مارکیٹ میں ان کا پہلا قدم ہے اور اسے فیس بک کی مالک کمپنی میٹا کے لیے ایک چیلنج کے طور پر دیکھا جاتا ہے۔ ویژن پرو ایک چیکنا اور مہنگا ڈیوائس ہے، جس کی قیمت $3,499 ہے، اور اگلے سال کے شروع میں خریداری کے لیے دستیاب ہوگی۔

ہیڈسیٹ کو ڈیجیٹل مواد کو حقیقی دنیا کے ساتھ ملانے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے، جو پہلے کبھی نہ ہونے والے عمیق تجربات پیش کرتا ہے۔ یہ بنیادی طور پر گیمنگ، سٹریمنگ ویڈیوز اور ورچوئل میٹنگز کے لیے استعمال کیا جائے گا۔ Apple نے Marvel اور Star Wars جیسی مشہور فرنچائزز سے اسٹریمنگ مواد فراہم کرنے کے لیے Disney کے ساتھ شراکت کی ہے۔

Vision Pro کو بہت زیادہ کمپیوٹنگ پاور کی ضرورت ہوتی ہے، اس لیے اسے زیادہ تر وقت دیوار میں لگانا پڑتا ہے۔ بیٹری صرف دو گھنٹے تک چلتی ہے۔

ایک دلچسپ خصوصیت یہ ہے کہ اس میں ایک بیرونی ڈسپلے ہے جو صارف کی آنکھوں کو اپنے آس پاس کے لوگوں کو دکھاتا ہے، جس سے بات چیت کو آسان بناتا ہے۔ تاہم، ڈیوائس کا مقصد کمپیوٹر یا اسمارٹ فونز کو تبدیل کرنا نہیں ہے۔

ریلیز ایپل کو میٹا کے ساتھ براہ راست مقابلہ کرتی ہے، جو ورچوئل دنیا اور میٹاورس پر توجہ مرکوز کر رہی ہے۔ میٹا نے حال ہی میں اپنے کویسٹ وی آر ہیڈسیٹ کی ایک نئی نسل کا اعلان کیا۔ توقع ہے کہ ایپل اور میٹا کے درمیان دشمنی بڑھے گی کیونکہ دونوں کمپنیاں VR مارکیٹ میں غلبہ حاصل کرنے کے لیے مقابلہ کر رہی ہیں۔

ویژن پرو کے علاوہ، ایپل نے اپنے MacBook Air اور Mac Pro کمپیوٹرز میں بھی اپ ڈیٹس متعارف کرائے ہیں۔ انہوں نے اپنے M2 پروسیسر چپ سے چلنے والے 15 انچ کے میک بک ایئر کی نقاب کشائی کی، جو جلد ہی دستیاب ہوگی۔

کمپنی نے میک پرو کا ایک نیا ورژن بھی جاری کیا، ان کے اعلیٰ کارکردگی والے ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر، ایک M2 الٹرا چپ کے ساتھ۔

ایپل کا Vision Pro VR ہیڈسیٹ کا اعلان کمپنی کے لیے ورچوئل رئیلٹی کی دنیا میں ایک اہم قدم ہے۔ یہ Meta کے ساتھ مقابلہ کرنے اور بڑھتی ہوئی VR مارکیٹ میں قدم جمانے کے ان کے ارادے کی نشاندہی کرتا ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں