وہاب ریاض لاہور کی سیلابی سڑکوں پر بائیک چلانے والوں پر تنقید کا نشانہ بنے۔

پنجاب کے عبوری وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے کھیل اور امور نوجوانان وہاب ریاض لاہور میں نکاسی آب کے کاموں کی نگرانی کر رہے ہیں۔ — @mugheesali81

لاہور: پنجاب کے عبوری وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے کھیل اور امور نوجوانان وہاب ریاض کو بدھ کے روز لاہور میں سیلابی سڑکوں پر بائیک چلانے والوں اور راہگیروں پر چھڑکاؤ کرنے پر عوامی تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔

حکام نے بتایا کہ آج سے پہلے، مسلسل بارش نے 30 سال پرانا ریکارڈ توڑ دیا جب پنجاب کے دارالحکومت میں 10 گھنٹوں کے دوران 290 ملی میٹر سے زیادہ بارش ہوئی، جس کے نتیجے میں کم از کم سات افراد ہلاک ہو گئے۔

کمشنر لاہور محمد علی رندھاوا نے کہا کہ میٹروپولیس میں 291 ملی میٹر بارش ہوئی، جس کے دوران ایک درجن سے زائد علاقوں میں 200 ملی میٹر سے زیادہ بارش ریکارڈ کی گئی۔

بارش کے بعد حالات کا جائزہ لینے اور کلیئرنس اور نکاسی آب کے کاموں کی نگرانی کے لیے وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی اور ان کی کابینہ نے آج شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کیا۔

مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر شیئر کی گئی ایک ویڈیو میں ریاض – ایک کار میں سوار – سیلاب زدہ سڑکوں پر لاپرواہی سے گاڑی چلاتے اور گزرنے والی گاڑیوں اور موٹر سائیکل سواروں پر بارش کا پانی چھڑکتے دیکھا جا سکتا ہے۔

ریاض کے اس رویے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے صحافی اور اینکر پرسن رضا زیدی نے اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر لکھا کہ جب بے وقوف کو کوئی عہدہ ملتا ہے تو وہ ایسا ہی کرتا ہے۔

ایک اور کو “غیر قانونی کھیل وزیر” کہا گیا۔

ایک سوشل میڈیا صارف کا کہنا تھا کہ ’وہ اتنی تیزی سے گاڑی چلا رہا ہے اور سڑک پر لوگوں کی بالکل بھی پرواہ نہیں کرتا‘۔

ایک اور نیٹیزن ریحام ودود نے کہا: “وزیر کھیل وہاب ریاض کی طرف سے انتہائی خوفناک حرکت کیونکہ انہیں لاہور کی سڑکوں پر لاپرواہی سے گاڑی چلاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے جو کہ شدید بارش کے بعد پانی سے بھری ہوئی ہیں، انہیں گزرنے والی گاڑیوں اور سوار لوگوں پر پانی کے چھینٹے مارتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ ان کی بائیک پر۔”

سابق کرکٹر پر تنقید کرتے ہوئے کچھ نیٹیزنز نے ان کے استعفیٰ کا مطالبہ بھی کیا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں