پاکستان کے قومی مفادات کو نقصان پہنچانا پی ٹی آئی کا ایجنڈا ہے: مریم – ایسا ٹی وی

وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے بدھ کو کہا کہ تاریخ گواہ ہے کہ کوئی بھی غدار، سازشی اور غیر ملکی ایجنٹ ہر بار اپنے جھوٹ، فریب اور پروپیگنڈے سے ہر ایک کو بیوقوف نہیں بنا سکتا۔

ایک بیان میں، انہوں نے کہا کہ پاکستان کو امریکی فوجی امداد روکنے کی سازش 9 مئی کو ہونے والے آتش زنی کے حملوں کی سازش کا حصہ تھی۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان کے معاشی، دفاعی اور قومی مفادات کو نقصان پہنچانا پی ٹی آئی کا مشن تھا اور اس ناپاک مشن کی تکمیل کے لیے اربوں روپے کی غیر ملکی فنڈنگ ​​کی گئی۔

انہوں نے ریمارکس دیئے کہ اسی غیر ملکی فنڈ سے ملک کے اندر اور باہر میڈیا مہم چلائی گئی۔

انہوں نے کہا کہ غیر ملکی فنڈنگ ​​سے سوشل میڈیا نیٹ ورک بنایا گیا جس کے ذریعے پاکستان کے آئینی اور دفاعی اداروں اور ان کی قیادت کے خلاف مہم چلائی جا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ افواج پاکستان کی قیادت اور شہداء کے خلاف بیرون ملک گھناؤنا پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے۔

وزیر نے مزید کہا کہ قوم پاکستان مخالف ایجنڈے اور اس کے ایجنٹوں کو کبھی معاف نہیں کرے گی کیونکہ عوام سیاست اور ملک دشمنی میں فرق کو پہچان چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سائفر ڈرامہ اور 9 مئی کو آتش زنی کے حملے ایک ہی سازش کے دو مراحل تھے۔

مریم نواز نے کہا کہ پاکستانی عوام 9 مئی کے سانحہ کے بعد امریکہ کے خلاف امریکہ کے خلاف پروپیگنڈے اور امریکہ سے مدد کی بھیک مانگنے سے پوری طرح آگاہ ہیں۔

وزیر نے کہا کہ عمران حکومت کی طرف سے آئی ایم ایف پروگرام پر دستخط کی سخت شرائط اور پھر پی ٹی آئی کی طرف سے اس کی خلاف ورزی اس ایجنڈے کا حصہ تھی کہ پاکستان کو اہم قومی مفادات پر سمجھوتہ کرنے پر مجبور کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ اس منظم سازشی ایجنڈے کو عملی جامہ پہنانے کے لیے ایک کٹھ پتلی کو اقتدار میں بٹھایا گیا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ عمران خان نے اقتدار میں آتے ہی چین پاکستان اقتصادی راہداری پر پیش رفت روک دی، کشمیر پر سمجھوتہ کیا، دہشت گردوں کو پناہ دی اور اب وہ پاکستان کی فوجی امداد روکنے کے مشن پر ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس ایجنڈے کے تحت، انہوں نے جاری رکھا، پاکستان کے قریبی، قابل اعتماد اور ہمیشہ مددگار دوست ممالک پچھلی حکومت سے ناراض تھے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ غیر ملکی میڈیا میں انسانی حقوق کی نام نہاد مہم دراصل اسی مذموم ایجنڈے کا تسلسل ہے تاکہ پاکستان کی بین الاقوامی امداد روکی جا سکے اور فوج پر دباؤ ڈالا جا سکے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں