نیب نے عثمان بزدار کو 9 مئی کو طلب کر لیا – ایسا ٹی وی

قومی احتساب بیورو (نیب) نے آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو دوبارہ طلب کرلیا۔

رپورٹس کے مطابق سابق وزیراعلیٰ عثمان بزدار دوران تفتیش نیب کی تحقیقاتی ٹیم کو مطمئن کرنے میں ناکام رہے جس کے بعد اینٹی کرپشن واچ ڈاگ نے انہیں 9 مئی کو صبح 11 بجے طلب کر لیا ہے۔

نیب کی تحقیقاتی ٹیم نے ان سے جاری تحقیقات سے متعلق 30 سوالات کے جوابات فراہم کرنے کو کہا ہے۔

مزید برآں بزدار سے ایک ہی دن میں 40 ارب روپے کے منصوبوں کے افتتاح کی وضاحت طلب کی گئی ہے جس میں ممکنہ بدعنوانی اور شفافیت کے فقدان کے خدشات بڑھ گئے ہیں۔

نیب نے ان سے ڈی جی خان میں ڈیم کی تعمیر کا ٹھیکہ من پسند افراد کو دینے میں مبینہ جانبداری کے حوالے سے بھی جواب طلب کیا ہے۔

رواں ماہ کے آغاز میں قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو کرپشن، بدعنوانی اور آمدن سے زائد اثاثوں سے متعلق انکوائری میں طلب کیا تھا۔

کال اپ نوٹس کے مطابق نیب لاہور نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب کو 9 مئی کو صبح 11 بجے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہونے کا کہا ہے۔

بیورو نے بزدار کو کرپشن واچ ڈاگ کے سامنے پیش ہوتے ہوئے 30 نکاتی سوالنامہ جمع کرانے کو کہا ہے۔

عثمان بزدار پر ڈیرہ غازی خان (ڈی جی خان) میں ڈیم کی تعمیر کا ٹھیکہ من پسند افراد کو دینے کا الزام تھا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں