آپ نے ٹھپےلگانے والا کام کشمیر میں بھی دکھایا، دھاندلی نا منظور

مظفرآباد: وفاق میں اتحادی پاکستان اور مسلم لیگ (ن) نے آزاد کشمیر کے ضمنی مناظرہ میں ایک دوسرے پر دھاندلی کے الزام کو مسترد کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق آذاد کشمیر کے علاقے باغ میں ایل اے 15 کے ضمنی انتخاب میں پاکستان پیپلز پارٹی کے ضیاء قمر 16794 ووٹ لیکر آگے ہیں جبکہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مشتاق منہاس 16590 ووٹ لیکر نمبر پر۔

انہوں نے کہا کہ ابھی تک اپنے نتائج مکمل نہیں ہوئے ہیں کہ ن لیگ کی جانب سے پردھاندلی کے الزامات عائد کردئیے گئے ہیں، لیگی رہنما حنا پرویز بٹ نے الزام عائد کیا ہے کہ آپ نے ٹھپےلگا والاکام کشمیر کو بھی دکھا دیا ہے۔ تحریر کہ “دھاندلی نا منظور”۔

امتیاز کے معاون عطاار نے بھی الزام عائد کیا ہے کہ آزاد کشمیر میں دھاندلی کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں، ن لیگ کوآزاد کشمیر باغ کے نشانات پرنی انتخابات میں واضح برتری ہے، ایسا ممکن نہیں کہ پولنگ پارٹیزپر80 سے 90 فیصد پولنگ، پولنگ سیاستزپر30سے39 فیصد پولنگ، ہم۔ نتائج کے لیے بغیر جانا

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما فیصل کریم کنڈی نے کہا کہ ہم آزاد کشمیر میں پہلی پوزیشن پر نہیں ہیں، واضح کارکردگی سب کے سامنے ہے، آزاد کشمیر کے لوگوں کی محبت شروع ہو گئی ہے، ہمارے امیدوار شام سے برتری حاصل کر رہے ہیں۔

فیصل کریم کنڈی نے کہا کہ باغ کی نشانی پارٹی رہی تھی اور پی پی ہی حاصل کرنے کے لیے کسی کو لگاتے ہیں کہ ٹھپے لگا رہے ہیں تو ثبوت لےکرآئے، ٹھپے کے بارے میں ثابت کرنے والے لوگ پیش کریں،ہارنے والی ہمیشہ دھاندلی کےالزامات لگاتی ہے۔ نئی بات

تبصرے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں