”تھریڈ” صارفین کی تعداد حیران کن ہے۔

ان کے لیے مائیکرو بلاگنگ طرز کی نئی ایپ ‘تھریڈز’ کے مقابلے میں برابر ہونے کے بعد بڑے پیمانے پر پوری دنیا میں پسند کی خواہش ہے اور صارفین کی تعداد اس ایپ پر اپنے اکاؤنٹس پر ہے۔

تھایڈز کو انسٹاگرام ایپ کے طور پر کیا گیا ہے اور اسے اسی پلیٹ فارم کی ٹیم نے بنایا ہے لیکن اس ایپ پر اس طرح ٹیکسٹ اپ ڈیٹس میسر کو چلانا ہے۔

‘ٹوئٹر کِلر’ کہلائی جانے والی میٹا کی اس ایپ کی نئی ‘تھریڈز’ کے لیے متعین ہونے کے لیے صرف چند پاس موجود ہیں تاہم اسے دس ڈالر صارفین نے اپ ڈیٹ کیا تھا اب اس ایپ نے ایک نیا ریکارڈ بنایا ہے۔

حال ہی میں ‘تھریڈز’ کے صارفین کی تعداد بتانے والے ٹریکر سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ ایک ہفتے میں بھی کم وقت کی مدت میں 100 ڈالر صارفین نے اپ ڈیٹ کیا ہے جس کے سبب تھاڈز نے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی تاریخ رقم کی ہے۔ میں ایک نیا ریکارڈ قائم کیا۔

تھیڈیز سے قبل آرٹیفیشل انٹیلیجنس کی ایپ ‘چیٹ جی پی ٹی’ کو کم مدت میں زیادہ صارفین کو اپ لوڈ کرنے کا اعزاز حاصل تھا، لیکن چیٹ جی پی ٹی کے 100 ڈالر صارفین کے ہونے میں 2 ماہ کا لگ گیا۔

فیس بک کی پیرنٹ کمپنی میٹا نے 100 ممالک میں ایک ساتھ متعہ کیا تھا اور صرف ایک دن اس ایپ پر 30 صارفین نے اپنا اکاؤنٹ بنا لیا تھا۔

ایلون مسک کی جانب سے ایک دن میں ٹوئٹس پڑھنے کی تعداد اور دیگر پالیسیوں میں تبدیلی کی وجہ سے صارفین کو کافی بات چیت کی گئی تھی، تاہم صورتحال میں مارک زکربرگ کا میٹا تھائیڈ ایپ لانچ کرنا ایک عقلمندانہ فیصلہ ہے۔ ۔

میٹا کے بانی نے آپ کو تمام پریشان کرنے والی نئی پالیسیوں کی الٹ پالیسیز کو اپنایا ہے اور ”فیڈی ورس” سہولت بھی فراہم کی ہے۔

تبصرے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں