سندھ میں خوبصورت خوبصورت پرندوں کی آمد

کراچی: رواں سال سندھ میں ریکارڈ 12 لاکھ افراد پرندوں کی آمد ہوئی یہ بات مقابلہ جنگلی حیات کے حالیہ واقعات کے دوران سامنے آئی۔

آپس میں جنگلی حیات کے درمیان بلیک اسٹورک، پنٹیل سنپ مرغابی، انڈین اسپاٹ بلڈک، لیسر فلیمنگو، پیرسائیٹک جیگر، گریٹ کریسٹیڈ جیگوار، کاٹن ٹیلی، نابل ڈک کے علاقے کے پانیوں میں نظر آئے۔

اجتماعی حیات سندھ 1980 کی زمین سے ہر سال جنگ میں موجود آبگاہوں اور آبگاہوں سے گزرتے ہیں

رواں سال کی معیاری رپورٹ کے مطابق اس سال سندھ میں روایتی طور پر پروان والے 41 کامیاب واٹر فاولز کے علاوہ کچھ نئے نئے پرندے دیکھے گئے جن کی آمد کا ریکارڈ پہلے موجود نہیں تھا، سندھ کی چند مخصوص آبگاہوں اور آبی گزرگاہوں پر۔ سال والے پرندوں کی تعداد چھ لاکھ، 13 ہزار 851 رہی۔

ماہرین کے مطابق سندھ کی شکار آبادیوں کی تعداد 12 لاکھ سے زیادہ ہے، گزشتہ سال سیلاب کے بعد آبائی علاقوں کو وافر مقدار میں پانی گاہوں اور حکومت کی جانب سے پرگاہوں کے لیے مکمل طور پر پابندی لگائی گئی۔ پرندوں کی آمد میں

تبصرے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں