ملک کو بحرانوں سے نکالنے کے لیے جرات مندانہ فیصلے ناگزیر ہیں، وزیر اعظم شہباز – ایسا ٹی وی

وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے اتوار کو کہا کہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کا پروگرام ملک کے لیے چیلنجنگ ہے لیکن جرات مندانہ فیصلے ملکی معیشت کے استحکام کے لیے مددگار ثابت ہوں گے، ملک کو بحرانوں سے نکالنے کے لیے جرات مندانہ فیصلے ناگزیر ہیں۔

پرائم منسٹر یوتھ بزنس اینڈ ایگریکلچر لون سکیم کے تحت چیک تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ڈالر کے مقابلے روپے کی قدر مستحکم ہونے سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے کیونکہ یہ ریلیف گزشتہ رات عوام تک پہنچا دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کا پروگرام ملک کے لیے چیلنجنگ ہے لیکن جرات مندانہ فیصلے ملکی معیشت کے استحکام کے لیے مددگار ثابت ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اس وقت مشکل معاشی چیلنجز سے گزر رہا ہے لیکن اللہ تعالیٰ کی مدد اور نوجوانوں کی محنت سے ہم ان چیلنجز سے نکلنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ نواز شریف اور انہیں بدترین سیاسی انتقام کا سامنا ہے، حتیٰ کہ انہیں اقتدار سے باہر ہونے کے بعد جلاوطنی پر بھیج دیا گیا، لیکن عمران نیازی کے برعکس مسلم لیگ (ن) کے قائد نے کبھی ملک کے خلاف کچھ نہیں سوچا۔

دوسری جانب عمران خان کو مسلم لیگ ن کی قیادت اور اپوزیشن کے بارے میں دن رات فوبیا تھا، وہ جھوٹے مقدمات بنا کر جیلوں میں ڈالنے پر تلے ہوئے تھے، انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے رہنما انقلابیوں کو ساتھ نہیں لے سکتے۔ مسلم لیگ ن کی حکومت کے اقدامات

انہوں نے کہا کہ تمام یوتھ پروگرام نواز شریف کے دور میں شروع کیے گئے تھے کیونکہ صرف پنجاب بھر میں میرٹ پر لوگوں کو 50,000 گاڑیاں فراہم کی گئیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ قرضہ سکیم کی کامیابی کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ 99 فیصد قرضے بینکوں کو واپس کر دیے گئے۔

وزیراعظم نے کہا کہ نواز شریف اور انہیں بدترین سیاسی انتقام کا سامنا ہے، حتیٰ کہ انہیں اقتدار سے باہر ہونے کے بعد جلاوطنی پر بھیج دیا گیا، لیکن عمران نیازی کے برعکس مسلم لیگ (ن) کے قائد نے کبھی ملک کے خلاف کچھ نہیں سوچا۔

وزیراعظم نے کہا کہ پی ٹی آئی کا دور بدعنوانی کے بڑے بڑے گھپلوں سے داغدار تھا جن میں چینی اور گندم کے گھپلوں، بی آر ٹی پشاور، مالم جبہ، توشہ خانہ کے تحائف کی فروخت، برطانیہ کی ایجنسی کی جانب سے 60 ارب روپے کا غبن وغیرہ شامل ہیں اور کہا کہ ان سے کوئی انکار نہیں کرسکتا۔ سخت حقائق.

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان نے کہا کہ میرٹ پر طلباء کو لاکھوں لیپ ٹاپ دئیے گئے ہیں اور اس انقلابی پروگرام کو بین الاقوامی سطح پر سراہا گیا ہے۔

انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ گزشتہ حکومت کے دور میں تعلیم اور صحت کے شعبوں کو بری طرح نظر انداز کیا گیا۔

تقریب کے دوران اس قرضہ سکیم سے مستفید ہونے والوں کی کامیابی کی کہانیاں بھی دکھائی گئیں۔

قبل ازیں وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے امور نوجوانان شیزا فاطمہ خواجہ نے کہا کہ اب تک ملک کے 10 لاکھ نوجوانوں کو آسان شرائط پر قرضے جاری کیے جا چکے ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں