ٹائی ٹینک ”آبدوزوں کا موت کے معاہدے پر دستخط کرنا ضروری ہے”۔

لندن : آفاق سمندری جہاز ‘ٹائی ٹینک’ کے ملبے کی تلاش کے لیے آبدوز جانے والے مسافروں کو موت کے شہر پروانے پر دستخط کرنا۔

ٹائی ٹینک ملبے کو تلاش کرنے کے لیے جنوبی مشرقی ریاست کے ساحل سے لاپتہ آبپاشی کی تلاش کے لیے ریسو جانے والی آبپاشی جاری ہے، اتوار کی صبح رابطہ منقطع۔

بحر اوقیانوس میں لاپتہ ہونے والی آبدوز سے یہ انکشاف کیا ہے کہ اس میں سفر کرنے کے لیے تلاش کرنے والے افراد سے ایک تحریری معاہدہ کیا جاتا ہے جس کے متن میں تین بار موت کا ذکر موجود ہے۔ یہ بات آبدوز میں سفر کرنے والے ایک سابق مسافر مائیک ریس نے بی بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا۔

مائیک ریسس کا کہنا تھا کہ سال 2022 میں جب میں ایک بات پر یقین رکھتا تھا کہ اس کا بھی کچھ نتیجہ نکلا، انہوں نے بتایا کہ کوئی مسئلہ نہیں ہوتا کیونکہ آپ کو اس سے پہلے علم نہیں ہوتا۔ ۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ کوئی تفریحی زندگی نہیں ہوتی بلکہ ایک تجسس ہوتا ہے جس کا کھوج لگانے کے لیے آپ اس آبدوز کے سفر پر نکلتے ہیں۔

بی بی سی کے مطابق نیویارک میں والے ایک مصنف اور پروڈیوسر ہیں اور انہوں نے دی سمپسنز پر بھی کام کیا ہے۔

واضح رہے کہ اوشین گیٹ سپیڈیشن نامی کمپنی کی ٹائٹن آبدوز میں 2 پاکستانیوں کے محافظ 5 افراد سوار تھے،

لاپتہ ہونے والے پاکستان اینگرو کے وائس چئیرمین شہزادہ داؤد اور ان کے 19 صاحبزادے سلیمان داؤد بھی ان کے اہل خانہ میں شامل ہیں اپنے پیاروں کی بفاظت واپسی کے لیے قوم سے دعاؤں کی اپیل کی

اوشین گی ایکسپیڈیشن نامی کمپنی اس وقت 2023 کا پانچواں پانچواں ‘مشن’ چل رہی ہے، اس کی ویب سائٹ کے مطابق مشن گزشتہ ہفتے شروع ہونا تھا اور آبدوز سے ٹائی ٹینک کے ملبے کا سفر فی کس ڈھائی۔ دردز کا ہوتا ہے۔

تبصرے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں