خوشگوار سماجی میڈیا اکاؤنٹس سے انور مقصود کو خطرہ، باپ نے خدشہ ظاہر کیا۔

پاکستان کے سماجی میڈیا پر ملک کے نامور دانشور، مصنف، ٹی وی میزبان اور ان کے منظور نظر پیغامات گردش کرتے رہتے ہیں۔

دنیا میں جب تب سوشل میڈیا نے انٹری دی ہے کہ مصدقہ خبریں تیزی سے غیر قانونی طور پر افراتفری اور غلط فہمیاں پیدا کر رہی ہیں۔ بہت سے مشہور لوگوں کے بارے میں سوشل میڈیا اکاؤنٹس کے بعد آپ کے ٹوئٹس منظر عام پر آتے ہیں جن کے حق میں تحریک کی طرف سے بھی ہوتا ہے۔

پاکستان کی بھی کئی نامور شخصیات کے ساتھ ساتھ سماجی میڈیا اکاؤنٹس ہیں جو ان کے لیے مطلوبہ بنتے ہیں ایک ہی شخصیت کے ملک کے نامور دانشور، مصنف، ٹی وی میزبان اور اداکار انور ہیں۔

انور جو اپنے اکثر بیانات اور تقاریر میں تماشائیوں سے ناراض ہوتے ہیں اور جن لوگوں کے ساتھ حس مزاح والی ہوٹل بھی محظوظ ہوتے ہیں، تاہم سوشل میڈیا بالخصوص اُن کے نام سے تعلق رکھنے والے اکاؤنٹس کے بارے میں سوچتے ہیں اور اس پر اظہار خیال کرتے ہوئے ان کے والد نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ان کے والد نے اس پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا۔

بلال مقصود نے اپنے اکاؤنٹ پر اپنے والد انور مقصود کے ساتھ ایک ٹوئٹ کا اسکرین شاٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ‘ایسی ٹویٹس کی وجہ سے میرے والد کی زندگی میں پڑتی ہے۔ اس شخص نے (جس نے انور مقصود کے نام سے مجھے اکاؤنٹ بنایا ہے) نے پہلے ہی نام کیا ہے۔ براہ کرم کیا آپ سب کا اکاؤنٹ رپورٹ کر سکتے ہیں؟ ابو سوشل میڈیا پر کچھ بھی پوسٹ نہیں کرتے۔ ان کے اصلی اکاؤنٹ سے صرف تین پوسٹ کی گئی۔ ہم نے اس وجہ سے اکاؤنٹ بنایا ہے ہم اکاؤنٹس کو رپورٹ کر سکتے ہیں۔’

بلال مقصود نے کچھ پوسٹ قبل تصاویر اور ویڈیو شیئرنگ پلیٹ فارم انسٹاگرام پر ایک ویڈیو شیئر کریں۔ جس میں انہوں نے بتایا تھا کہ انور مقصود نوکیا یعنی بٹن والا فون استعمال کرتے ہیں۔

اس سے 2020 میں انور مقصود نے اپنے ویڈیو پیغام میں بتایا تھا کہ ‘اُن کا صرف ایک اکاؤنٹ’۔

دوسرے بلال مقصود کے اپنے والد کے بارے میں اس ٹویٹ پر صارفین نے بھی تبصرے کرتے ہوئے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے فاریہ کاشف نامی ایک صارف نے کہا کہ براہِ کرم کرم سینیئرز کو اس گند میں نہ گھسیٹیں۔

زنیرہ اظہر نے لکھا کہ فیک نیوز/اکاؤنٹس کسی کی زندگی میں ڈال سکتے ہیں۔ یہ ہماری جوابدہی ہے کہ ہم سوشل میڈیا پر کچھ ریٹویٹ یا شیئر کرنے سے پہلے اس کی یقین دہانی کراتے ہیں۔

تبصرے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں