کیا شیزو فرینیا دائمی مرض ہے؟ سکون اور علاج

شینیا ایک سنگین حالت کا مرض ہے، جس کی علامات میں فریب نظر، تعلقی تعلقی اور حقیقت سے لاتعلقی شامل ہیں، اس کیفیت میں انسان ٹھیک نہیں ہوسکتا اور اس کا دماغ اس پر قابو نہیں پا سکتا۔

یہ ایک دائمی اور شائستگی عارضہ ہے جو کسی شخص کے سوچنے، عمل کرنے، جذبات کا اظہار کرنے، حقیقت کو سمجھنے اور دوسروں سے تعلق رکھنے سے متاثر ہوتا ہے اور اس کے نتیجے میں وہ مشقت کا شکار ہوتا ہے۔

اس حوالے سے اے آر وائی نیوز پروگرام باخبر سویرا میں ایسوسی ایشن کے ایڈیٹر پروفیسر ڈاکٹر جاوید درس نے کہا ہے کہ اس بیماری سے چھٹکارے کے لیے کچھ آنے والے واقعات پر عمل کرنے سے شیزو فرینیا کو کافی حد تک افاقہ پہنچا۔

انہوں نے بتایا کہ اس بیماری کو ہم نظر انداز نہیں کرتے کیونکہ یہ جذباتی نہیں ہیں بلکہ ان کے خیالات کی بیماری ہے اور اس میں منفی قسم کی شکوک و شبہات زیادہ لگتی ہیں، لوگوں سے خوف محسوس ہوتا ہے اور وہ مریض کو عجیب لگتا ہے۔ سی آوازیں اور تصاویر مختلف نظر آتی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ شیزوفرینیا کے شکار لوگوں کو ایسی اچھی کارکردگی کا سامنا کرنا پڑتا ہے، وہ خود کو خوفزدہ محسوس کرتے ہیں اور پیچھے رہ جانے والے محسوس کرتے ہیں کہ وہ حقیقت سے رابطہ کرتے ہیں۔

ڈاکٹر اکبر درس نے کہا کہ اس بیماری کی ڈاکٹر نے بہت سی باتیں کی ہیں جن کی بڑی وجہ موروثی باتوں کے علاوہ دماغ میں کیمیکلز درست ہونے کے ان کے ڈسٹرب اور دماغ دونوں کے ایک دوسرے سے متاثر ہونے سے بھی شیزوفرینیا لاپتہ ہیں۔ ہوتا ہے

اس مرض کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ مرض کی تشخیص فوری طور پر نہیں ہوتی، یہ علامات کم چھ ماہ تک میں اس شخص کو شیزوفرینیا کے مریض نے کہا، اس کا علاج مریض کے ساتھ کیا جاتا ہے۔ توجہ اور اس کے ساتھ اچھا رویہ بھی رکھنا ضروری ہے۔ مناسب علاج سے اس پر قابو پانا۔

تبصرے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں