کراچی میں نجی اسکول سسٹم کا ڈپٹی ڈائریکٹر قتل

پولیس اہلکار کرائم سین ٹیپ کے پیچھے کھڑے ہیں۔ — اے ایف پی/فائل

بڑھتی ہوئی لاقانونیت اور اسٹریٹ کرائم کے درمیان، اتوار کو کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں نجی اسکول سسٹم کے ڈپٹی ڈائریکٹر اور فیڈریشن آف پرائیویٹ اسکولز کے وائس چیئرمین سید خالد رضا کو نامعلوم مسلح افراد نے گولی مار کر ہلاک کردیا۔

اطلاع ملتے ہی پولیس اور ریسکیو اہلکار جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور جاں بحق ہونے والوں کو اسپتال منتقل کیا۔

مقامی شہریوں کے مطابق موٹر سائیکل پر سوار دو مسلح حملہ آوروں نے رضا پر فائرنگ کی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ مشتبہ افراد کو علاقے میں متعدد بار دیکھا گیا، انہوں نے مزید کہا کہ انہوں نے پولیس کو ان کے بارے میں آگاہ کیا تھا لیکن حکام نے ان کی شکایات پر کان نہیں دھرا۔

پولیس حکام کے مطابق گلستان جوہر بلاک 7 میں ایک شخص کو قتل کیا گیا ہے۔

سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایسٹ) زبیر نذیر نے کہا، “بظاہر یہ قتل کسی ذاتی دشمنی کی وجہ سے ہوا،” انہوں نے مزید کہا کہ وہ قتل کی مزید تفتیش کر رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ مسلح حملہ سے رضا سے کچھ نہیں چھینا گیا۔

گورنر اور وزیراعلیٰ سندھ نے قتل کا نوٹس لے لیا۔

دریں اثناء وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی کراچی سے اس حوالے سے رپورٹ طلب کرلی۔ انہوں نے ماہر تعلیم کے قتل پر گہرے دکھ کا اظہار بھی کیا۔

گورنر کامران ٹیسوری نے بھی رضا کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس افسر سے رپورٹ طلب کر لی۔

انہوں نے مزید کہا کہ قتل کی تمام زاویوں سے تفتیش کی جائے گی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں