آخری چینی رپورٹر نے ویزا میں توسیع سے انکار کے بعد ہندوستان چھوڑ دیا – SUCH TV

بھارت میں اظہار رائے کی آزادی سکڑتی جا رہی ہے کیونکہ اس ماہ کے شروع میں حکام کی جانب سے ویزا کی توسیع سے انکار کے بعد آخری بقیہ چینی رپورٹر نئی دہلی سے چلا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق رپورٹر چینی سرکاری نیوز ایجنسی شنہوا سے وابستہ تھا۔

اخراج تاریخ میں پہلی مثال ہے کہ اس وقت 1980 کے بعد کوئی چینی صحافی ہندوستان میں موجود نہیں ہے۔

یہ اقدام اس بات کی بھی عکاسی کرتا ہے کہ مودی کے بھارت میں صحافیوں کے لیے کوئی جگہ نہیں ہے جسے سب سے بڑی جمہوریت کہا جاتا ہے اور صحافیوں کو حکومت کے خلاف رائے رکھنے کی وجہ سے بھارت چھوڑنے پر مجبور کیا جا رہا ہے۔

یہ بھی آزادی اظہار اور صحافیوں کی آواز کو دبانے کی بدترین مثال ہے۔

بھارتی حکام ایسے اقدامات صرف اقلیتوں پر اپنے بدترین ظلم و ستم کو چھپانے کے لیے کر رہے ہیں۔

دنیا بھارتی حکام کی جانب سے انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں پر اپنے شدید تحفظات کا اظہار کر رہی ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں