چمن میں جیل اہلکاروں پر حملہ کرکے قیدی فرار ہوگئے۔


اس نامعلوم تصویر میں تاریک لاک اپ کے اندر بیٹھے قیدی نظر آ رہے ہیں۔ — اے ایف پی/فائل
  • چمن کی جیل سے 15 قیدی فرار ہو گئے۔
  • قیدی جیل اہلکار سے کلاشنکوف چھین کر فائرنگ کر رہے ہیں۔
  • پولیس کا کہنا ہے کہ فرار ہونے والے قیدیوں پر سنگین جرائم کا الزام ہے۔

خیبرپختونخوا کے علاقے چمن کی ایک جیل میں جمعرات کے روز تقریباً 15 سے 20 قیدی جیل کے اہلکاروں پر حملہ کر کے ڈھیلے ہو گئے۔

پولیس نے بتایا کہ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب قیدیوں نے عید الاضحی کی نماز کے لیے اپنی بیرک سے باہر نکلتے ہوئے اہلکاروں پر حملہ کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ قیدیوں نے جیل کے ایک اہلکار سے ہتھیار چھین لیا اور فرار ہو گئے۔

بیرک انچارج نے بتایا کہ فرار ہونے والے قیدیوں پر دفعہ 302 (قتل عمد کی سزا) اور دیگر سنگین جرائم کے الزامات ہیں۔

دریں اثنا، جیل حکام کا کہنا ہے کہ قیدیوں نے اسی کلاشنکوف سے فائرنگ کی تھی جو انہوں نے مرکزی دروازے کے باہر کھڑے افسر سے چھینی تھی۔

پاکستانی آج عید الاضحی منا رہے ہیں، جسے ‘بقرہ عید’ کہا جاتا ہے، جو اسلامی کیلنڈر کے آخری مہینے میں حج کی ادائیگی کے اختتام کی علامت ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں